Home / اہم خبریں / وزارت داخلہ کا مراسلہ بدنیتی پرمبنی،مولانا فضل الرحمن انصارالاسلام کے دفاع میں آگئے
وزارت داخلہ کا مراسلہ بدنیتی پرمبنی،مولانا فضل الرحمن انصارالاسلام کے دفاع میں آگئے

وزارت داخلہ کا مراسلہ بدنیتی پرمبنی،مولانا فضل الرحمن انصارالاسلام کے دفاع میں آگئے

پشاور،،،،جمعیت علمائے اسلام ف کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے سیاسی و مذہبی جماعتوں کے مسلح جتھوں سے متعلق وزارت داخلہ کے مراسلے کو بدنیتی پر مبنی قرار دے دیا۔

مولانا فضل الرحمان نے نجی چینل ے گفتگو کرتے ہوئے وزارتِ داخلہ کی جانب سے سیاسی و مذہبی جماعتوں کی ملیشیا اور وردی سے متعلق مراسلے پر اپنے ردعمل کا اظہار کیا۔

مولانا فضل الرحمان نے وزارت داخلہ کے مراسلے کو بدنیتی پر مبنی قرار دیتے ہوئے کہا کہ مراسلے کے الفاظ نئے نہیں ہیں۔

انہوں نے کہا کہ عسکری ونگ اور رضاکار میں فرق ہوتا ہے، رضاکار انصارالاسلام کے ہیں جو جے یو آئی کا دستوری ونگ ہے، رضاکار الیکشن کمیشن سے رجسٹرڈ ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ رضاکاروں پر کبھی اعتراض نہیں کیا گیا، رضاکار جے یو آئی ف کے دستور کا حصہ ہیں۔

سربراہ جے یو آئی ف کا کہنا تھا کہ 2001 میں ہم نے لاکھوں کے جلسے کیے، ہمارے رضاکاروں کی پلاننگ کو اس وقت کے وزیر داخلہ نے بھی سراہا۔

انہوں نے مزید کہا کہ 2017 میں بھی ہم نےجلسے کیے، انصارالاسلام کے رضاکاروں نے سیکیورٹی سنبھالی، آزادی مارچ میں بھی ان ہی رضاکاروں نے سیکیورٹی دی، گملا تک نہیں ٹوٹا۔

مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ ڈنڈے کی کوئی رجسٹریشن نہیں ہوتی، نہ لائسنس ہوتا ہے، ایسے مراسلے صرف سیاسی دباؤ کے لیے ہوتے ہیں۔

About admin

اپنا پیغام دیں

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Scroll To Top