Home / اہم خبریں / چئیرمین نیب کیساتھ ماضی میں کیا فراڈ ہوا؟کس نے کیا؟خطاب میں تاجروں کو قصہ بیان کردیا
چئیرمین نیب کیساتھ ماضی میں کیا فراڈ ہوا؟کس نے کیا؟خطاب میں تاجروں کو قصہ بیان کردیا

چئیرمین نیب کیساتھ ماضی میں کیا فراڈ ہوا؟کس نے کیا؟خطاب میں تاجروں کو قصہ بیان کردیا

اسلام آباد: چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال نے تاجروں سے خطاب کے دوران اپنے ساتھ ہونے والے فراڈ کا قصہ بھی بیان کیا۔

اسلام آباد میں تاجروں سے خطاب میں چیئرمین نیب نے کہا کہ ’جب میں سپریم کورٹ سے ریٹائرڈ ہوا تو کافی پیسے ملے تو سوچا کہ ایک پلاٹ لے لوں‘۔

انہوں نے کہا کہ ’میں نے ایک سوسائٹی کا اشتہار دیکھا جس میں آبشار، مساجد، ٹینس کورٹ، جم اور شاپنگ سینٹر سب تھا لیکن اس میں لکھا تھا کہ شرط یہ ہے کہ اکٹھے پیسے دیں گے تو بیلٹنگ نہیں ہوگی‘۔

چیئرمین نیب کا کہنا تھا کہ’ میں نے اس کے لیے 45 لاکھ روپے دیے لیکن آج تک پلاٹ ملا نہ اور ہی 45 لاکھ ملے لیکن جب چیئرمین نیب لگا تو اس سوسائٹی کے کرتا دھرتا کے دو لوگ آئے، انہوں نے 45 لاکھ کا چیک مجھے واپس کیا جس پر متاثرین کا پوچھا تو پتا چلا میرا نمبر ان کے بعد کا ہے جس پر انہیں دوسرے لوگوں کو پیسے ادا کرنے کا کہا اور پھر اپنے پیسے لینے کا کہا جس کے بعد آج تک میرا پیسہ واجب الادا ہے‘۔

About admin

اپنا پیغام دیں

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Scroll To Top